قبائل کو پاکستان کی بقا کی جنگ لڑنےکی باوجود خون میں نہلایا گیا؛قاید جمعیت

0
1303

راحت اللہ شینواری

میرانشا: قبائلی عوام نے ہمیشہ قیام امن کے لیے جدوجہد کی ہے اور پاکستان کی بقا کی جنگ لڑی ہیں لیکن اس کے باوجود قبائل کو خون میں نہلایا گیا محب وطن قبائلیوں کو وطن سے محبت کی سزا دی گئ.قاید جمعیت مولانا فضل الرحمن کی شمالی وزیرستان میں عظیم الشان اجتماع سے خطاب۔

جمعیت علما اسلام فضل الرحمن گروپ،نے شمالی وزیرستان کی تحصیل میرعلی کے علاقے عیدک میں “مدرسہ نظامیہ” میں دستار فضیلت کانفرنس کے عظیم الشان اجتماع کا انعقاد کیا گیا۔جسکی صدارت مولانا عبدالقادر نے کی۔
مولانا فضل الرحمن نے اجتماع سے خطاب کرتے ہوےکہا،کہ قبائل عوام نے ہمیشہ امن کے قیام کے لیے جدوجہد کی ہے لیکن اس کے باوجود قبائل کو خون میں نہلایا گیا محب وطن قبائلیوں کو وطن سے محبت کی سزا دی گئ.

Image may contain: 9 people, crowd
قبائل کو اسلام اور پاکستان سے والہانہ عقیدت کی سزا دی گئی قتل وغارت گری اور خون کی ندیاں بہا کر قبایل عوام کو دربدر کیاگیا اور انکو اپناگھر بار چھوڑنے پر مجبور کیا گیا انہوں نے کہا کہ آج شمالی وزیرستان کے عوام نے جس عقیدت و محبت کا اظہار کیا اس سے ثابت ہوا کہ قبایل جبر اور ظلم برداشت کرسکتے ہیں لیکن اسلام اور جمعیت علمائے اسلام سے انکی عقیدت ختم نہیں کی جاسکتی. انہوں نے کہا کہ آج میں تمام قوتوں کو امن کا پیغام دینا چاہتا ہوں اور فوج کو کہتا ہوں کہ وہ مزید اپریشنوں کےنام پر کاروائیوں سےگریز کریں اورقبائل کومزید تنگ کرنےسے باز رہیں
مسلح گروپوں کو واضح پیغام دیتے ھو ئے کہا گیا, کہ وہ بندوق کورکھ کرجمعیت کاپرچم اٹھائیں اور جنگ کاراستہ ترک کرکے واپس ائیں کوئی مائی کالال ان پرہاتھ نھیں ڈالےگا

Image may contain: one or more people and people standing
انھوں نےکہا کہ اج کےبعد چیک پوسٹوں پر ہتک امیز رویہ مساجد ومدارس کی بندش اورعوامی املاک پرقبضہ برداشت نھیں کیا جائیگا
آج کے بعد ظلم وجبر کی تاریک راتیں ختم امن کی صبح طلوع ہو چکی ہے اپنے آنے والی نسلوں کا خیال کرتے ہوئے خونریزی کا سلسلہ بند کریں. انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام پر اسلام آباد سے فیصلے مسلط کرنے کی بجاے عوامی رائے کا احترام کیا جاے.
اجتماع کی صدارت مولانا عبدالقادر نے کی جبکہ کانفرنس سے اکرم خان درانی. مفتی عبدالشکور, مفتی اعجاز شینواری، عبدالجلیل جان ,عین الدین شاکر, الحاج احمد سعید اورمفتی سید جانان نے بھی خطاب کیا.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here